علی رضا سید نے وادی نیلم سمیت کنٹرول لائن پر پے درپے بھارتی فائرنگ کی مذمت کی ہے

Ali Raza Syed

Ali Raza Syed

برسلز (پ۔ر) چیئرمین کشمیر کونسل ای یو علی رضا سید نے وادی نیلم سمیت لائن آف کنٹرول پر پے درپے بھارتی فورسزکی فائرنگ کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔اپنے ایک بیان میں انھوں نے کہا کہ جس طرح وحشیانہ انداز میں آزادکشمیر کے علاقے نیلم وادی میں ایک مسافر بس کو نشانہ بنایا گیا، انتہائی قابل مذمت ہے۔

انھوں نے کنٹرول لائن پربھارتی فوج کی جارحیت میں پاکستانی فوجیوں کی شہادت پر بھی دکھ اورافسوس ظاہرکیااوراس حملے کی مذمت کی۔بیان میں کہاگیاہے کہ مقبوضہ کشمیرکے ساتھ ساتھ آزاد کشمیرکے نہتے لوگ بھی بھارتی جارحیت اورریاستی دہشت گردی سے محفوظ نہیں۔ انھوں نے کہاکہ بھارت دنیاکی توجہ مقبوضہ کشمیرمیں بڑے پیمانے پر انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں سے ہٹاناچاہتاہے ۔ اسی لئے کئی دنوں سے لائن کنٹرول پرمسلسل اشتعال انگیز فائرنگ کررہاہے۔یادرہے کہ بدھ کوکنٹرول لائن پرواقع وادی نیلم کے علاقے میں بھارتی فوج کی فائرنگ سے ایک مسافربس کے سات مسافر شہید اور گیارہ افراد زخمی ہوئے۔ایک دوسرے حملے میں تین پاکستانی فوجی بھی بھارتی جارحیت کا نشانہ بن کر شہید ہوئے ہیں۔

چیئرمین کشمیرکونسل ای یوعلی رضاسید نے مسافربس سمیت پر کنٹرول لائن پر بھارتی حملوں میں شہیداورزخمی ہونے والے افراد کے خاندانوں کے ساتھ گہری ہمدردی کا اظہارکیااور شہداکے درجات کی بلندی کے لئے دعاکی۔ انھوں نے کہاکہ دہشت گردی کسی بھی صورت میں مہذب دنیاکے لئے قابل نہیں۔ عالمی برادری چاہیے کہ بھارتی ریاستی دہشت گردی کانوٹس لے اور اسے ان مظالم سے روکاجائے۔ انھو ں نے کہاکہ بھارتی مظالم سات عشروں سے جاری ہیں اور گذشتہ چار ماہ کے دوران بھارت نے ظلم وستم کی انتہاکردی ہے۔ مسلسل کرفیواور پابندیوں کی وجہ سے لوگوں کی زندگی اجیرن ہوگئی ہے۔ پیلٹ گن سے نہتے اورپرامن لوگوں کے چہرے مسخ اور آنکھوں کو ضائع کیا جا رہا ہے۔