برسلز میں کشمیری ثقافت پر تین روزہ نمائش کا آغاز، افتتاح مولن بیک کی میئر مادام فرانسواسکپمانز نے کیا

Brussels Kashmiri Culture Exhibition

Brussels Kashmiri Culture Exhibition

برسلز (پ۔ر) بلجیم کے دارالحکومت برسلزکے علاقے ’’مولن بیک‘‘ میں کشمیری ثقافت کے بارے میں تین روزنمائش کا آغاز ہو گیا۔ یہ نمائش مولن بیک کی کمیون کی عمارت میں ہو رہی ہے جس کا اہتمام کشمیر کونسل یورپ (ای یو) نے کیاہے جبکہ میزبانی کے فرائض پاکستانی نژاد خاتون کونسلر شازیہ منظورانجام دے رہی ہیں۔

’’کشمیر کی خوبصورتی مولن بیک میں‘‘ کے عنوان سے یہ نمائش اتوار 24 اپریل تک جاری رہے گی۔ نمائش میں کشمیری ثقافت سے متعلق فن پارے اور دستکاری کا سامان رکھاگیاہے ۔ نمائش کے افتتاح کے موقع پر کشمیری میوزک کا بھی اہتمام کیا گیا تھا اور کشمیری لباس کی بھی نمائش کی گئی ۔ نمائش کا افتتاح مولن بیک کی میئرمادام فرانسواسکپمانز نے کیااوراس موقع پر بلجیم میں پاکستا ن کی سفیر محترمہ نغمانہ ہاشمی بھی موجودتھیں۔

بڑی تعدادمیں لوگوں نے نمائش کی افتتاحی تقریب میں شرکت کی اور نمائش میں رکھی گئی اشیاء میں اپنی دلچسپی کا اظہارکیا۔ اس موقع پر چیئرمین کشمیر کونسل ای یوعلی رضا سید نے کہا کہ نمائش کا مقصد کشمیری ثقافت کو اجاگر کرنے کے ساتھ ساتھ لوگوں کو مقبوضہ کشمیرکی تازہ ترین صورتحال سے آگاہ کرنا ہے۔

کشمیرکونسل ای یو ابتک یورپ میں مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کے لیے متعدد اقدامات کر چکی ہے۔ بلجیم سمیت یورپ کے مختلف ملکوں میں ابتک کئی کانفرنسیں اور سیمیناروں منعقد ہوچکے ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں روکوانے اور مسئلہ کشمیرپر آگاہی پیدا کرنے کے لیے یورپ میں کشمیریوں کی حمایت میں ایک ملین دستخطی مہم جاری ہے ۔ علی رضاسید کے بقول، جب تک ایک ملین دستخط جمع نہیں ہوجاتے، یہ مہم جاری رہے گی۔ایک ملین دستخط مکمل ہونے پر مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کے معاملے کو یورپی پارلیمنٹ میں پیش کیاجاسکے گا۔