سازشی عناصر سے محتاط رہنا ہو گا کارکنان ہوشیار رہیں

PMN L

PMN L

لندن: زرئع کے مطابق مسلم لیگ ن آزاد کشمیر برطانیہ میں کچھ سیاسی کارکنان پارٹی کو دھڑوں میں تقسیم کرنے کے شد و مد میں جٹے ہوئے ہیں لیکن لیگی کارکنان اس سے با خبر ہیں اور ان شر پسند عناصر کا منہ توڑ جواب دینے کے لئے تیار ہیں جو صورت حال ہے اس کی وجہ سے برطانیہ مسلم لیگ نون ایک تماشہ بن چکی ہے ۔

برطانیہ کی مدار پارٹی کے صدر اور مسیر گروپ لندن پلان ناکامی کے بعد استعفیٰ دینے کے بعد اپنی ہی بات سے مکرگئے ۔ پہلے استعفیٰے دیےپھر انکار کر دیا زبیر اقبال کیانی نے پارٹی صدر راجہ فاروق حیدر کے خلاف ایک پوری چارج شیٹ پانچ صفوں پر لکھ کر فاروق حیدر پر الزامات کی انتہا جر دی فاروق حیدر کو پاکستان کی لیڈر شپ کے سامنے بدنام کرنے کیلئے وہ سب کچھ تحریر کر دیا جو کوئی دشمن بھی نہیں کر سکتا تھا ایسے ایسے الزامات لگائے

اپنی ھی لیڈر شپ پر پھر دوسرے دن اسکی تردید کر دی ابھی ایک بار پھر لوگوں کو مخصوص برطانیہ سے مسلم لیگ نون کی مٹینگ کے نام پر لوگوں کو گرال ھاوس میں بلا کر ٹوپی ڈرامہ رچانے کی کوشش کی جارہی ہیں کیونکہ گرال ھاوس لیوٹن مسلم لیگ نون برطانیہ کے خلاف سازشوں کا گڑھ تصور کیا جاتا ہے

ایک بار پھر اسی سازشی متنازعہ ھاوس میں مسلم لیگ نون کی میٹنگ کے نام پر اپنی چند پسند کے لوگوں کو بلا کر مسلم لیگ نون برطانیہ کو واضح طور پر دو گروپوں میں تقسیم کر دیا ہے کیونکہ پوری برطانوی سے صرف پندرہ لوگوں نے شرکت کی ہے ان سے صرف چند مرکزی عہدیدارن تھے باقی کوئی مرکزی عہدیدار موجود نہیں تھا برطانیہ میں مسلم لیگ نون کے کارکنوں میں سخت تشویش پاییء جاتی ہے کیونکہ جو شخص اپنے عہدے سے تحریری طور پارٹی کے صدر پر الزامات کی پوچھاڑ کے بعد استعفیٰ دے چکا ہے اس کو پارٹی کی مٹینگ بلانے کا کوئی حق نہیں اور پھر صرف چند اپنی پسند کے لوگوں کو اجلاس میں بلا کر مسلم لیگ نون برطانیہ کو واضح طور پر تقسیم کر دیا ہے پارٹی کو دھڑوں میں تقسیم کرنے میں راجا ادریس جنرل سیکرٹری بھی کارہائے نمایان انجام دے رہے ہیں ۔ اگر اسی طرح کی الزامات کی بوچھاڑ ہوتی رہی تو پارٹی کا شیارہ بکھر کر رہ جائےگا ۔ پارٹی کو متحد کرنے کی ضرورت ہے اور اس کے لئے مثبت سیاسی رویوں کے ساتھ ساتھ نیک نیتی بھی شامل ہونی چاہئے