دو لاکھ تیرہ ہزار دو سو پناہ گزینوں نے پناہ کے لیے اپنی درخواستیں جمع کرائی

Athens Refugees

Athens Refugees

ایتھنز (سکندر ریاض چوہان) یورپین یونین کے ممالک میں اس سال کی دوسری سہہ ماہی (اپریل تا جون) میں دو لاکھ تیرہ ہزار دو سو پناہ گزینوں نے پناہ کے لیے اپنی درخواستیں جمع کرائی جو گزشتہ سال کے مقابلے میں پچاسی فی صد اضافہ ہے پاکستانی تیسری بڑی کمیونٹی ہے جس نے پناہ کی درخواستیں دی یہ اعداد وشم ار یورپین یونین کے ادارہ شماریات کی جانب سے جاری کیے گے۔

ادارہ شماریات کی جانب سے جاری کردہ اعداد وشمار کے مطابق سال 2015 کی دوسری سہہ ماہی کے دوران213200پناہ گزین جن میں نمایاں تعداد شام،افغانستان اور پاکستان سے تعلق رکھنے والین تارکین وطن کی ہے ۔رپورٹ کے مطابق پناہ گزینوں کی تعداد میں پہلی سہہ ماہی کی نسبت دس فی صدی اضافہ ہواہے جو کہ یونان میں ریکارڈ کیاگیاہے یونان میں جنوری تامارچ دوہزار چھ سوسولہ ریکارڈ کی گئی جبکہ دوسری سہہ ماہی اپریل تاجون میں دس فی صد اضافے کے بعد یہ تعداد دوہزار آٹھ سوپنسٹھ ہوگئی۔

پناہ کے لیے جمع کرائی گئی درخواستوں میں پاکستانیوں کی شرح بارہ فی صد کے ساتھ تین سوپنتالیس کی تعداد کو ظاہر کیاگیاہے۔یورپین ادارہ شماریات کی جانب سے جاری کردہ رپورٹ میں سال کے پہلے چھ ماہ کے دوران یونان،جرمنی،ہنگری،آسٹریا،اٹلی فرانس اور سویڈن میں پناہ گزینوں کی موجودگی کونمایاں ظاہرکیاگیاہے جبکہ جون تا ستمبر تک آنے والے لاکھوں شامی، عراقی، فلسطینی، افریقی اور ایشیائی تارکین وطن کے بارے فی الحال مصدقہ تعداد کو شائع نہیں کیاگیاہے ایک اندازے کے مطابق جو ن تا ستمبر یورپی یونین کی حدودمیں کم وبیش دس لاکھ پناہ گزین داخل ہوچکے ہیں جن کااندراج کیاجارہاہے یورپی یونین کے رکن ممالک میں یونان جہاں روزانہ پانچ سو پناہ گزینوں کی آمد ریکارڈ کی جارہی کے علاوہ اٹلی اور اسپین شامل ہیں جہاں سے پناہ گزین مرکزی یورپی ممالک اور سیکنڈے نیوین ممالک جارہے ہیں۔

ادارہ شماریات کی جانب سے یورپ داخل ہونے کی کوشش میں اپنی جانیں گنوانے والے پناہ گزینوں کے اعداد وشمار بھی ظاہر نہیں کیے گے۔