پاکستان کی طرح فرانس میں بھی بے نظیر بھٹو کی برسی عقیدت و احترام کے ساتھ منائی گئی

Benazir Bhutto

Benazir Bhutto

پیرس (محمد اصغر) پیرس کے مقامی ریسٹورنٹ میں پیپلزپارٹی یورپ کے کوآرڈینیٹر کامران یوسف گھمن کی جانب سے بے نظیر بھٹو کی آٹھویں برسی کا اہتمام کیا گیا،، تقریب میں پیپلزپارٹی فرانس کے جنرل سیکرٹری ملک منیر احمد،میڈیا ایڈوائزر اصغر صغیر پی آر او صوفی عابد نعیم جوائنٹ سیکرٹری ملک لطیف الرحمن پاکستان سپریم کورٹ کے سنئیر وکیل،ملک شکیل الرحمان، چئیرمین کلچر ونگ ملک الہ یار چئیرمین مجلس عاملہ غلام مرتضی عباسی سنئیر راہنما پی پی فرانس خان اشتیاق خان سیکرٹری خزانہ صوفی محمد سرفراز سمیت پارٹی کارکنوں اور پاکستانی کمیونٹی نے بھرپور شرکت کی اور بے نظیر بھٹو کو خراج تحسین پیش کیا۔

تقریب کا آغاز تلاوت قرآن پاک سے کیا گیا جس کی سعادت حافظ حبیب الرحمان نے حاصل کی ،س ہدیہ نعت رسول ﷺ کی سعادت مادخ احمد اور صوفی محمد سرفراز کے حصے میں آئی ٹیج سیکرٹری کے فرائض ملک منیر احمد نے سرانجام دئیے ،تقریب سے ٹیلی فونک خطاب کرتے ہوئے پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم افضل چن کا کہنا تھا کہ آج کا دن پاکستان کی تاریخ کا افسوسناک دن ہے آج ہی کے دن پاکستان ایک عظیم لیڈر سے محروم ہوا، محترمہ کو اپنی شہادت کا پہلے ہی علم تھا مگرپھر بھی وہ پاکستان آئیں اور عوام سے محبت کا ثبوت دیا،ان کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی کی تاریخ قربانیوں سے بھری پری ہے آج پیپلزپارٹی دو طرح کی لڑائی لڑ رہی ہے ایک پارٹی کے اندر اور ایک پارٹی سے باہر،انہوں نے مزید کہا کہ پارٹی کی صفوں میں کچھ کالی بھیڑیں موجود ہیں جو پارٹی کا نام خراب کررہی ہیں انہیں لگام ڈالنے کیلئے پارٹی قیادت کو اقدامات کرنا ہونگے۔

اننہوں نے مزید کہا کہ اس دفہ چئیرمیں یا کو چئیرمیں آپ سے ٹیلفونک خطاب نہیں کر سکے کیونکہ تمام قیادت گڑھی خدابخش میں مصروف تھی آئندہ کسی تقریب میں ضرور خطاب کریں گئے قیادت کو اس بات کا ادراک ہے کہ آپ لوگ دیار غیر میں جس طرح پارٹی کے جھنڈے کو بلند رکھے ہوئے ہیں ، تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پیپلزپارٹی یورپ کے کوآرڈینیٹرکامران یوسف گھمن کا کہنا تھا کہ ہمارا ایمان ہے کہ شہید کبھی مرتا نہیں بے نظیر بھٹو آج بھی ہمارے دلوں میں آباد ہیں،انہوں نے مزید کہا کہ پیپلزپارٹی مشکل دور سے گزر رہی ہے وہ دن دور نہیں جب بلاول بھٹو زرداری ملک کی باگ دوڑ سنبھالیں گے، انہوں نے کہا کہ ہم تمام دوست جناب چئیرمیں بلاول بھٹو زرداری اور صدر پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹیر ین جناب آصف علی زرداری کی قیادت میں متحد ہیں اوران کے ساتھ قدم سے قدم ملا کے چلیں گے اننہوں نے کہا زاہد اقبال خان پی پی فرانس کے صدر ہیں اور وہ اپنی بچی کے آپریشن کی وجہ سے پروگرام میں شریک نہیں ہو سکے آئندہ پروگرام میں وہ بھی ہمارے ساتھ ہوں گے سیکرٹری جنرل ملک منیر احمد نے پارٹی قیادت سے شکایت کرتے ہوئے کہا کہ بے نظیر بھٹو کی کمی ہمیں بہت محسوس ہوتی ہے جب وہ زندہ تھیں تو یورپ میں موجود پارٹی ورکروں کی ہر ضرورت کا خیال رکھتی تھیں مگراب یورپ میں موجور پارٹی کارکنوں کو کوئی پوچھتا نہیں جس کی وجہ سے یورپ بھر میں پارٹی کارکن دھڑوں میں تقسیم ہوگئے ہیں ،انہوں نے پارٹی قیادت سے اپیل کی کہ یورپ میں پیپلزپارٹی کو متحد کرنے کیلئے اقدامات کرے۔

انہوں نے مزید کہا کہ پارٹی قیادت کوچاہئیے کہ وہ اپنی مفاہمتی پالیسی کو ختم کریں تاکہ پارٹی پھر سے مستحکم ہوسکے،پاکستان پریس کلب فرانس کے صدر ساحبزادہ عتیق الرحمان کا کہنا تھا کہ بے نظیر بھٹو کی سیاست سے تو اختلاف کیا جا سکتا ہے مگر ان کی حب الوطنی اورپارٹی کارکنوں سے محبت کو فراموش نہیں کیا جاسکتا،انہوں نے مزید کہا کہ محترمہ بے نظیر کی شہادت کے بعد کسی بھی سیاسی جماعت میں ایسا لیڈر نہیں آیا جو پاکستان کو ساتھ لیکر چلے۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پارٹی رہنما اورایڈووکیٹ سپریم کورٹ ملک شکیل الرحمان کا کہنا تھا کہ بے نظیر بھٹو نے اپنی صلاحیتوں کی بدولت پاکستان کو مشکلات سے نکالامگر اب بلاول بھٹو زرداری کی قیادت میں پیپلزپارٹی متحد ہے مگر پارٹی قیادت کو چاہئیے کہ فرانس میں مقیم پارٹی ورکروں کو متحد کرنے کیلئے پیپلزپارٹی کی اعلیٰ قیادت اپنا کردار ادا کرے۔

میڈیا ایڈوائزر ایم اے صگیر نے اپنے خطاب میں کہا کہ جناب آصف علی زرداری کا پیپلز پارٹی پارلیمنٹیر ین کا صدر ب بننا خوش آئند ہے اور انشا اللہ جس طرح انہوں نے پلے ملک کو مفاحمت کی پالیسی پر چلایا اور ملک کو بحرانوں سے نکالا وہ آئندہ میں ملک کو مشکلات سے نکلالنے کےلئے اپنا کردار ادا کریں گے تقریب میں مسلم لیگ نون کی رہنما سلطانہ اصغرنے بھی شرکت کی ان کا کہنا تھا کہ بے نظیر بھٹو جیسی شخصیت نہ تھی اور نہ دوبارہ پیدا ہوگی،بے نظیر نے ملک کی خاطر اپنی جان کا نذرانہ پیش کرکے پاکستان کی تاریخ میں ایک نئی مثال قائم کی جو قابل تعریف ہے،تقریب کے آخر میں محترمہ بے نظیر بھٹو کے ایصال ثواب کیلئے دعا بھی کی گئی کامران گھمن نے تمام حاضرین کا پاکستان پیپلز پارٹی کی طرف سے شکریہ ادا کیا۔