دانش لیاقت کو لیاقت حیات کا بیٹا ہونے کی سزا دی جا رہی ہے۔ ہمارے حوصلے پست نہیں کئے جا سکتے

London

London

لندن برطانیہ: دانش لیاقت کو لیاقت حیات سابق مرکزی صدر جموں کشمیر نیشنل عوامی کے بیٹے ہونے کی سزا دی جا رہی ہے۔ دانش لیاقت کی ضمات کو نہ منظور کرتے ہوئے جیل بھیج دیا گیا جس کی جموں کشمیر نیشنل عوامی پارٹی بھرپور مذمت کرتی ہے۔

جموں کشمیر نیشنل عوامی پارٹی برطانیہ اس گھٹیہ اقدامپر پاکستانی ہائی کمیشن برطانیہ کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کے لئے لائحہ عمل طے کر چکی ہے ۔ کٹپتلی حکمران اور انتظامیہ کے گھٹیہ پن کا اندازہ اس بات سے بخوبی لگایا جا سکتا ہے کہ ایک ہی مقدمہ میں گرفتار دوسرے کارکن کی ضمانت منظور کر لی گئی جبکہ دانش لیاقت کو صرف لئے سزا دی جا رہی ہے کہ اس کے باپ نے ان نام نہاد حکمرانوں کے آگے حق اور سچ کی بات کی اور جدو جہد سے پیچھے نہیں ہٹا ۔کٹپتلی حکمران اپنے اوچھے ہتھکنڈوں سے عوام کو بیوقوف بنانے میں بری طرح ناکام رہے ہیں۔

اسی لئے آزادی پسندوں کی تحریک کو کچلنے کے لئے ایسے حربے استعمال کر رہے ہیں جعلی حکمرانوں کے اشارون پر انتظامیہ نہ صرف آزادی پسند رہنماوں کو بلکہ اپنے مضموم مقاصد تک رسائی حاصل کرنے کے لئے آزاد ی پسند رہنماوں کے گھروالوں کو اذیت پہنچا کر گھٹیہ پن کا مظاہرہ کر رہے ہیں لیکن ہم ان کو بتائے دیتے ہیں ہماری جدو جہد کی تاریخ اٹھا کر دیکھ لیں ہماری تحریک پر امن ہونے کے باوجود قربانیوں سے پر ہے اور ہمارے حوصلے کسی بھی صورت پست نہیں ہوئے ۔ اس قسم کا دباو ڈال کر اس ہماری جدو جہد کو سبوتاز نہیں کیا جا سکتا۔

ان خیالات کا اظہار جموں کشمیر نیشنل عوامی پارٹی کے مرکزی رہنماشوکت مقبول بٹ ، نیپ برطانیہ کے صدر محمود کشمیری ، جنرل سیکرٹری آصف مسعود چوہدری ، سردار الطاف ، ساجد شاہین ، ماجد میر ، ریاض ساغر ، راحیل شبیر ، محمد اسحاق بھٹی ، تیمور اعظم لون ، فیاض رشید ، زاہد لون ،سجاد راجا ، مسعود اقبال میر ، شفیق انقلابی ، سردار مشتاق ،مہتاب ملک ،کامریڈ اصغر ملک ،ظفر کھوکھر و دیگر نےدانش لیاقت حیات پر بنائے جانے والے بےبنیاد اور جھوٹے مقدمہ اور پھر ضمانت منظور نہ کر کے جیل بھیجے جانے کے خلاف رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کیا ۔