کشمیر نیشنل پارٹی آزاد کشمیر کے انتخابات میں بھرپور حصہ لے گی۔ عباس احمد بٹ

Kashmir Press Club Conference

Kashmir Press Club Conference

برطانیہ (تیمور لون) برطانیہ میں کشمیر نیشنل پارٹی کے سربراہ عباس احمد بٹ نے ڈنفورڈ میں کشمیر پریس کلب میں میڈیا کے نمائندوں کے سامنے پریس کانفرنس کے دوران کہا کشمیر نیشنل پارٹی آزاد کشمیر میں آئندہ ہونیوالے انتخابات میں بھرپور حصہ لیں گی۔ اس موقع پر نیشنل پارٹی کے سربراہ عباس احمد بٹ نے دارلحکومت مظفر آباد کے حلقے سے آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی کیلئے کشمیر نیشنل پارٹی کی طرف سے افضال سلہریہ کو پہلا امیدوار نامزد کردیا ہے۔ اس سلسلہ میں مزید امیدواروں کا نام جلد کردیا جائیگا۔

دوران پریس کانفرنس عباس احمد بٹ نے کہا کہ انتخابات کے اخراجات کے این پی برداشت کرے گی۔ عباس احمد بٹ نے کہا آزاد کشمیر کے انتخابات میں حصہ لینے کا بنیادی مقصد عوام کو مقبوضہ کشمیر کی آزادی قومی خود مختاری کے ساتھ اقتصادی و معاشی طور پع خوشخال بنانا ہے ۔ ایک خوشخال معاشرے کے قیام کے لیے نئی سوچ و نظریات سے اگاہ کرتا ہے ۔ عباس احمد بٹ نے کہا اس وقت آزاد کشمیر کرپشن لاقانونیت ، نا انصافی ، غربت نے ڈھیرے جما رکھے ہیں مظفر آباد کے ایوانوں میں بیٹھے ہوئے لینڈ مافیا کا قبضہ ہے ان کو عوام پرست جماعتیں خاموش نہیں رہ سکتی ہیں۔

بلکہ ان لیڈروں کی بد عمالیوں کے باعث تحریک آزادی کشمیر شدید متاثر ہوئی۔ آزاد کشمیر کے حکمران بتائیں انہوں نے اپنے پانچ سالہ دور میں مسئلہ کشمیر کے حوالے سے کیا تبدیلی لائی ہے اور عالمی سطح پر کتنی حمایت حاصل کی ہے تعمیر و ترقی اور مہنگا پراچیکٹ کے نام پر عوام کو سبز باغ دکھائے جارہے ہین۔ عباس احمد بٹ نے کہا یہ عوام کے ساتھ بہت بڑی زیادتی ہے کہ پی پی پی حکومت میرپور میں انٹرنیشنل ایرپورٹ کرنے کے بجائے وہاں پی پی پی قیادت ابھی تک باری باری نام نہاد سنگ بنیاد رکھ رہی ہے۔ کشمیری عوام ان داغا باز حکمرانوں سے جانی چھڑانا چاہتے ہیں۔

عباس احمد بٹ نے کہا کشمیر نیشنل پارٹی ایک سیاسی جماعت ہونے کے علاوہ عوام کے حقوق کے تخفظ اور قانون کی بالا دستی عوام کو بہترین قیادت دینے کی اہلیت رکھتی ہے۔ پریس کانفرنس کے دوران انہوں نے کہا 9/11 کے بعد عالمی حالات بدل چکے ہیں۔ عالمی دہشت گردی کے باعث خطے کے خالات بدل چکے ہیں ۔ عالمی قوتوں نے اپنے مفاد کی خاطر بھارت کے ساتھ تعلقات کو اسمیت دے رہی ہیں یہ ان کا دہرے معیار ہے ۔ ان کے اس دہرے معیار سے پاکستان سبق حاصل کرنا چاہیے ۔ اس نے ان قوتوں کا ساتھ دے کر کیا حاصل کیا ہے۔ پاکستان کے اندر غیر ملکی دہشت گردی کے باعث مسلہ کشمیر شدید متاثر ہوا ہے۔

کشمیر پارٹی کے سربراہ عباس احمد بٹ نے کہا کیا ہماری پارٹی آزاد کشمیر کے انتخابات میں ذاتی طور پر حصہ لے رہی ہے ۔ ہم چاہتے ہیں باقی قوم پرست جماعتوں کے ساتھ ضروز تعاون کریں گے ۔ انہوں نے کہا یہ اچھی بات ہے کہ جموں کشمیر پریس کانفرنس اے این پی ، یو۔ کے پی این پی آزاد کشمیر کے انتخابات میں حصہ لینا چاہیے۔ انتخابات کے موقع پر کشمیری قوم پرست جماعتیں انتخابات کے موقع پر خاموشی اختیار کریں بنیادی طور عوام تبدیلی چاہتے ہیں ۔ قوم پرست جماعتوں کو ریاست کا نظام بدلنے کیلیے آگے کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کشمیر نیشنل پارٹی ایک نظریاتی پارٹی ہے۔

عباس احمد بٹ نے کہا انتخابی نشان کا اولان آزاد کشمیر کے انتخابات کے اعلان کے بعد کیا جائیگا، پریس کانفرنس کے دوران کشمیر نیشنل پارٹی کے سربراہ عباس احمد بٹ نے آزاد کشمیر حکومت پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا وہ بلاول بھٹو کے دورہ میرپور کے موقع پر ایک رات کے قیام پر جو ساٹھ لاکھ روپیہ خرچ کیا یہ فنڈز کہاں سے آیا ہے بنیادی طور پر یہ ایک غریب خطہ ہے حکمران سن لیں اگر قوم پرست جماعتیں جیت گئیں تو ان حکمرانوں کی شاہ خرچیوں کا بھرپور حساب لیا جائیگا انہوں نے کہا ہمیں یقین ہے کشمیر نیشنل پارٹی ضرور سیٹیں حاصل کرے گی۔

انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ وہ آزاد کشمیر کے عام انتخابات میں کشمیر نیشنل پارٹی کا بھرپور ساتھ دیں خصوصاً مظفر آباد میں کے این پی کے امیدوار افضال سلہریا کو کامیاب کرنے میں اہم کردار ادا کریں عباس احمد بٹ نے کہا ایکٹ 1947 کے تحت کشمیری قوم پرست جماعتوں کو انتخابات سے روکنا مسئلے کا حل نہیں بلکہ ایکٹ 1947 پاکستان کے مجوزہ آئین 1973 کے منافی ہے آئین پاکستان اس بات کی ضمانت دیتا ہے کہ ریاست میں جمہوریت کے فروغ اور انسانی حقوق کے بنیادی فروغ اور خوشحالی معاشرے کے قیام کیلئے تمام سیاسی و قوم پرست جماعتوں کو انتخابات میں حصہ لینے سے روکا نہیں جا سکتا اگر پاکستان میں 1973 کے آئین کے تحت سیاسی و قوم پرست جماعتیں حصہ لے سکتی ہیں۔

آزاد کشمیر میں یہ وہرہ معیار نہیں ہونا چاہیے کشمیر نیشنل پارٹی کے سربراہ عباس احمد بٹ نے پاک چائنا اکنامک کو ریڈور کی مکمل حمایت کی ہے یہ منصوبہ جلد مکمل ہونا چاہیئے اس عظیم منصوبے کی تکمیل سے پاکستان کے دیگر علاقوں کیطرح گلگت بلتستان کے اندر علاقے کی تعمیر و ترقی اور خوشحالی آئے گی انہوں نے کہا میں سمجھتا ہوں کہ گلگت بلتستان کے غریب عوام کیلئے ٹیکنیکل ادارے و تعلیمی ادارے کھولے جائیں تاکہ وہ بھی تعلیم مکمل کرنے کے بعد خوشحال ہو سکیں یہ علاقہ جات تعمیر و ترقی کے لحاظ سے انتہائی پسماندہ ہیں۔

اسطرح عباس احمد بٹ نے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ کنٹرول لائن پر جاری تجارت اور بس سروس کو شہروں تک وسیع کیا جائے اور ریاست کے دونوں اطراف عوام کو زیادہ سے زیادہ سفری سہولیات اور تجارت میں مزید آسانیاں پیدا کی جائیں تاکہ ریاست کے دونوں اطراف عوام کے درمیان باہمی اعتماد و تعلقات کو مزید وسعت دیجائے یہ عوام کا بنیادی حق ہے عباس احمد بٹ نے کہا میرپور ایئرپورٹ ضرور بننا چاہیے اس ایئرپورٹ کی تعمیر سے سرینگر اور آزاد کشمیر کے عوام کو مزید فضائی سروس مل سکتی ہے۔

اس موقع پر کشمیر نیشنل پارٹی کے دیگر راہنماؤں چیف آرگنائزر مرزا محمد عاصم عبدالعزیز، برانچ کے این پی کے صدر انیس احمد، اورنگ زیب، عبدالعزیز نواز مجید کشمیری، کامران بخاری نے پریس میں بھرپور شرکت کی آخر پر میڈیا کے نمائندوں کے اعزاز میں کھانے کا اہتمام کیا گیا۔