محمد شکیل چغتائی کی قیادت میں کمیونٹی رہنمائوں نے قرارداد پیش کی

Mohammad Shakeel Chughtai,Leadership, Community

Mohammad Shakeel Chughtai,Leadership, Community

جرمنی (انجم بلوچستانی) ١٧ جون ٢٠١٥ء کو چیف کوآرڈینیٹر پیٹ یورپ شکیل چغتائی کی قیادت میں کمیونٹی رہنمائوں ڈاکٹر ریاست، خضر حیات تارڑ، وزیر ملک اور پرنس ارسلان چغتائی نے یہ قراردادپیش کی: پاکستان عوامی تحریک PAT یورپ کوآرڈینیشن بیورو اور منہاج القرآن میڈیا کوآرڈینشن بیورو MCB یورپ کے مرکزی آفس برلن میں سانحہ ماڈل ٹائون کے بارے میں،چیف کوآرڈینیٹر PATیورپ ؛ تحریک منہاج القرآن کے میڈیا کوآرڈینیٹر برائے یورپ اورسرپرست MCBیورپ محمد شکیل چغتائی کی سر براہی میں ہونے والے ہنگامی اجلاس میںAT PاورMQI کے کارکنوں کی جانب سے پاکستان میں PATکے کارکنوں کی بلا جواز گرفتاریوں پر تشویش کا اظہار کیا گیا۔

پاکستان میں ہونے والی دہشت گردی کے خلاف فوج کی کاروائیوں کی بھرپور حمائت کی گئی ، اہل تشیع، اقلیتی فرقوں و بیگناہ افراد کے دہشت گردوں کے ہاتھوںقتل،خصوصاًشیعہ برادری کے افراد کو چن چن کرشہید کرنے کے عمل کوسخت نا پسندیدہ وناقابل برداشت قرار دیا گیا،حکومت وقت کے خلاف احتجاج کرنے والے عوام پر ریاستی جبر، انکی شہادت اور شدید زخمی ہونے پر گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے اسے سانحہ ء ماڈل ٹائون کی طرح ریاستی دہشت گردی قرار دیاگیااور حکومت وقت کے اس ناعاقبت اندیش، بیدردانہ اور ظالمانہ رویہ کے خلاف متفقہ طور پر ایک قرارداد مذمت منظور کی گئی۔جس کا متن درج ذیل ہے۔

” سانحہ ء ماڈل ٹائون کو ایک سال گزرنے کے باوجودحکومت انصاف مہیا کرنے میں ناکام رہی۔ سانحہ ء ماڈل ٹائون کے بارے میں پیش کی جانے والی حکومتیJITرپور ٹ جھوٹ کا پلندہ ہے اورحکومتی وزراء کے وضاحتی بیانات مضحکہ خیز اوربے بنیاد ہیں۔ہم اس رپورٹ کو مکمل طور پر مسترد کرتے ہوئے اس مقدمہ کو فوجی کورٹ میں لے جانے کی حمایت کرتے ہیں۔حکومتی وزراء وقومی و صوبائی اسمبلیوں میں حکومت کی حامی جماعتوں کے سر براہان کو تحریک منہاج القرآن اورPATکے قائدین اور کارکنوں پر جھوٹے الزامات لگانے کے بجائے مظلوموں کی داد رسی کرنی چاہئے۔ وزیر اعلیٰ پنجاب میاںمحمد شہباز شریف سانحہ ء ماڈل ٹائون کے،جبکہ وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف،وزیر داخلہ چوہدری نثار اور وزیر اعظم کی کابینہ کے دیگر اراکین سانحہء اسلام آباد کے مکمل ذمہ دار اورجوابدہ ہیں۔ انہیں ان دردناک و افسوس ناک واقعات کی تحقیقات کے لئے مظلومین کی رضامندی سے جوڈیشنل کمیشن بنانا ہوگا اور تمام ذمہ داران کوقرارواقعی سزا دینی ہو گی۔ہم پاکستان میں ہونے والی تمام دہشت گرد کاروائیوںکی شدید مذمت کرتے ہیں۔ان کاروائیوں میں ملوث ہر شخص،ہر تنظیم، ہر پارٹی قابل مذمت اور لائق نفرین ہے۔گزشتہ انتخابات دھن ،دولت، دھونس اور دھاندلی کا مظہر تھے لہٰذا انہیں کالعدم قرار دیا جائے۔”

قرارداد کے آخر میں PATیورپ کی جانب سے پنجاب کی صوبائی حکومت اور پاکستان کی مرکزی حکومت سے چندمطالبات کئے گئے،جو جرمنی میں پاکستان کے سفیر سید حسن جاوید کی وساطت سے پاکستان روانہ کئے جائیں گے۔جرمنی میں قائم دیگر پاکستانی تنظیمات نے اس قرارداد کی حمائت کرتے ہوئیمکمل تعاون کا یقین دلایا ہے۔ یہ مطالبات درج ذیل ہیں:

١۔ وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمدشہباز شریف اور وزیر اعظم پاکستان میاںمحمد نواز شریف کو حکومتی عہدوں سے علیحدگی اختیار کرنی چاہئے۔
٢۔ PATاور دیگر احتجاجی گرفتار شدگان کو غیر مشروط طورپررہا کیا جائے اور انکے خلاف درج تمام مقدمات واپس لئے جائیں۔
٣۔ زخمی افراد کو علاج کی سہولتیں مہیا کی جائیں اورانکے اہل خانہ کو روزگار فراہم کیا جائے۔
٤ ۔ ان معاملات کی تحقیقات کیلئے سپریم کورٹ کے جج کی سربراہی میں دویا تین رکنی غیر جانبدارتحقیقاتی کمیشن قائم کیا جائے،جسے اپنی تحقیقات کیلئے ایک مقررہ وقت کا پابند کیا جائے۔
٥۔ منہاج القرآن کے مرکز پر پولیس ریڈ کے ذمہ دار تمام وزراء ، پولیس افسران اور سول حکام کوکمیشن کی تحقیقات مکمل ہونے تک اپنے عہدوں سے سبکدوش کیا جائے اور ان کا جرم ثابت ہونے پرانہیں کڑی سزا دی جائے۔
٧۔ سانحہ ماڈل ٹائون کا مقدمہ فوجی کورٹ میں منتقل کیا جائے۔
٨۔ انتخابات میں دھاندلی ثابت ہونے پرملک میںنئے الیکشن کمیشن کے ذریعہ نئے انتخا بات کرائے جائیں۔
٩۔ مطالبات پورے نہ ہونے کی صورت میں ہر چھہ ماہ بعد ان مطالبات کا اعادہ کیا جائے۔

Mohammad Shakeel Chughtai,Leadership, Community

Mohammad Shakeel Chughtai,Leadership, Community

مسودہ ء قراردادا ور مرکزی پیش کار: محمد شکیل چغتائی
چیف کوآرڈینیٹرپاکستان عوامی تحریک یورپ،میڈیا کو آرڈینیٹر تحریک منہاج القرآن یورپ اور سرپرست میڈیا کوآرڈینیشن بیورویورپ۔
پیش کنند گان: خضرحیات تارڑ،صدر مجلس شوریٰ منہاج القرآن انٹر نیشنل،برلن ؛ وزیر حسین ملک،مشیر ایشین جرمن رفاہی سوسائٹی، جرمنی؛ پرنس محمد ارسلان چغتائی،رکن منہاج یوتھ لیگ، برلن اورڈاکٹر ریاست خان،جنرل سکریٹری،ہیومنٹی کیر اسٹفٹنگ،جرمنی۔
حمایت کنندگان:سید اقبال حیدر،چیرمین ہیومن ویلفئیرایسوسی ایشن،فرانکفرٹ؛افضل قادری سابقہ جنرل سکریٹری منہاج یورپین کونسل، فرانکفرٹ؛ رانا بشیر،رہنما پیپلز پارٹی جرمنی؛ایشین جرمن رفاہی سوسائٹی،برلن کی وائس چیر پرسن عائشہ خاتون اوفنانس سکریٹر ی بیگم آر ایس چغتائی؛ عبدالمناف، رہنما منہاج الحسین،برلن؛مجاہد حسین شاہ،سینئر رہنما پیپلزپارٹی جرمنی؛ قیصر ملک ،سینئر رہنما پیپلز پارٹی،جرمنی؛ رشید احمد،رہنماپیپلزپا رٹی، جرمنی ومیاں مبین، رہنما پیپلز پارٹی،برلن؛میاں عمران الحق،صدر منہاج القرآن ا نٹرنیشنل، برلن،محمد ارشاد ، صدر منہاج پیس اینڈ اینٹیگریشن کونسل، برلن؛ظہور احمد،سربراہ ویب سائٹ پاکبان انٹرنیشنل،برلن؛ملک فیاض،بیورو چیف نظام ٹی وی،جرمنی۔