نیو ٹی وی پر پابندی کے خلاف مانچسٹر میں پاکستان پریس کلب برطانیہ نارتھ ویسٹ انگلینڈ کا احتجاج

New TV

New TV

مانچسٹر: نیو ٹی وی پر پابندی کو فوری طور پر ختم کیا جائے ورنہ صحافی برادری برطانیہ بھر میں احتجاج کا سلسلہ شروع کرے گی_(طلعت گوندل، صدر پاکستان پریس کلب برطانیہ ،نارتھ ویسٹ انگلینڈ) نیو ٹی وی نشریات کی بندش کے خلاف برطانوی صحافی برادری سراپا احتجاج۔

حکومت پاکستان کی جانب سے آزادی صحافت پر قدغن لگانے کی ہر کوشش کو ناکام بنایا جائے گا نیو ٹی وی پر لگائی جانیوالی قدغن فوری طور پر ختم کرکے آزادی اظہار رائے کی آزادی کو یقینی بنایا جائے _ اظہار رائے ایک بنیادی حق ھے اور اس حق کو کوئی حاکم وقت کتنی بھی کوشش کرلے یہ حق چھین نہیں سکتا مانچسٹر میں پاکستان پریس کلب برطانیہ انٹرنینشل کے نارتھ ویسٹ انگلینڈ چیپٹر کا ہنگامی مذمتی اجلاس صدر پریس کلب طلعت گوندل منعقد ہوا ، جس میں پریس کلب کے انفارمیشن سیکرٹری تنویر کھٹانہ، مرکزی نائب صدر اعجاز فضل ، سینئر صحافی ذاہد ظفر ، خلش اخبار کے چیف ایڈیٹر احمد نظامی، جنرل سیکرٹری مصطفٰی مغل ، نائب صدر لائبہ رزاق ، نائب صدر حنا جبین، جائنٹ سیکرٹری سلامت حسین ، چیف آرگنائزر اویس احمد، کوارڈی نیٹر خورشید احمد ، نغمانہ کنول ، مرزا شہزاد ، نوید چوہان ، حفیظ احمد ، خبریں کے طارق لودھی ، ماجد عجمی نے شرکت کی _ جبکہ غلام حسین ، محمد اظہر ، شاہد انجم ، شبیر احمد نائب صدر ابرار شیخ ، عمران علی ، عامر طفیل و دیگر نے فون کے ذریعے اجلاس میں شرکت کی۔

اس موقع پر برٹش پاکستانی صحافیوں نے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا کہ پاکستان میں جمہوریت کی بحالی اور میڈیا کی آزادی کے لئے صحافیوں نے جو بے پناہ قربانیاں دی ہیں ان کی قدر کی جائے _ آمریت کے خلاف احتجاج کرنے والوں میں صحافیوں نے اہم رول ادا کیا ھے _ لہذا جمہوری حکومت کے دور میں کسی نیوز چینل پر قدغن لگانا سمجھ سے بالا تر ہے۔ صدر پریس کلب طلعت گوندل کا کہنا تھا کہ اگر حکومت نے چوبیس گھنٹے کے اندر اندر پابندی ختم نہ کی تو نارتھ ویسٹ انگلینڈ کی برٹش پاکستانی صحافی برادری نہ صرف قونصل جنرل آفس مانچسٹر کے سامنے احتجاج کرے گی۔ بلکہ احتجاج کے اس سلسلے کو برطانیہ اور پورے یورپ تک پھیلایا جائے گا۔