مولانا آزاد اسٹڈی سنٹر نظام آباد میں یوم تعلیم تقریب سے محمد نصیر الدین اور دیگر دانشوروں کا خطاب

Youme Taleem Taqreeb

Youme Taleem Taqreeb

نظام آباد: ہندوستان کو ایک تعلیمی سوپر پاور بنانے اور یہاں کے تعلیمی ڈھانچے کی تعمیر اور تہذیبی ترقی میں ہندوستان کے پہلے وزیر تعلیم مولانا ابوالکلام آزاد کی خدمات اور افکار کا اہم رول رہا ہے۔ آج ضرورت اس بات کی ہے کہ مذہبی عدم رواداری کی تاریک فضا ء کو ختم کرتے ہوئے مولانا آزاد کی افکار کو عام کیا جائے اور ہندوستان کو اکیسویں صدی میں دنیا کے ترقی یافتہ ممالک کے شانہ بہ شانہ ترقی کی راہ پر لا کھڑا کیا جائے۔

ان خیالات کا اظہار جناب محمد نصیر الدین کوآرڈینیٹر مولانا آزاد اسٹڈی سنٹر نظام آباد ‘ ڈاکٹر محمد ناظم علی پرنسپل گورنمنٹ ڈگری کالج موڑتاڑ’ڈاکٹر محمد اسلم فاروقی صدر شعبہ اردو گری راج کالج’ محمد عابد علی لیکچرر کامرس گری راج کالج’ محمد عبدالبصیر لیکچرر اردو تلنگانہ اقامتی جونیر کالج اور جناب اعجاز صاحب اسسٹنٹ کوآرڈینیٹر اسٹڈی سنٹر مانو نظام آباد نے یوم تعلیم تقریب سے خطاب کے دوران کیا۔ تقریب کے آغاز پر اسٹڈی سنٹر کی طالبات نے مولانا آزاد کی حیات اور علمی و ادبی کارناموں پر روشنی ڈالی۔ ڈاکٹر محمد اسلم فاروقی نے کہا کہ مولانا آزاد کی بچپن میں اچھی تعلیم و تربیت ہوئی تھی اور انہوں نے ذاتی استعداد سے مطالعے کرتے ہوئے علوم حاصل کئے تھے۔

اس لئے ضرورت اس بات کی ہے کہ آج کی نوجوان نسل بھی مطالعے کی عادت ڈالیں اور مولانا آزاد کی شخصیت سے روشنی حاصل کرتے ہوئے اپنی زندگی کے مسائل حل کرے۔ انہوں نے طلبا کو مبارک باد دی کہ فاصلاتی تعلیم مرکز میں اہم شخصیات سے متعلق پروگراموں کے انعقاد سے طلباء کی معلومات میں اضافہ ہورہا ہے۔ ڈاکٹر محمد ناظم علی نے کہا کہ مولانا آزاد ہندوستان کے عظیم دانشور تھے۔ ہندوستان کی تہذیبی و ثقافتی تعمیر میں ان کا اہم کردار ہے۔

Youme Taleem Taqreeb

Youme Taleem Taqreeb

یوجی سی اور ساہتیہ اکیڈیمی جیسے اداروں کی شروعات اور تعلیم سب کے لئے جیسی فکر مولانا آزاد کی دی ہوئی ہے۔ ہندوستان کو اپنے اس عظیم سپوت پر ناز کرنا چاہئے۔ محمد عابد علی نے کہا کہ مولانا آزاد اصول پسند تھے اور اپنی شخصیت اور وضعداری سے انہوں نے وقت کے سیاست دانوں کو بھی سبق پڑھایا۔ محمد عبدالبصیر نے کہا کہ مولانا آزاد ایک علمی شخصیت تھے۔جن کے افکار سے استفادہ وقت کی اہم ضرورت ہے۔ انہوں نے صحافتی خدمات سے ہندوستان میں آزادی کے جذبے کو پروان چڑھایا۔

جناب نصیرا لدین صاحب نے کہا کہ مولانا آزاد تقسیم ملک کے خلاف تھے اور انہیں آزادی کے بعد کوئی بڑے قلمدان کی پیش کش کی گئی تھی۔ لیکن انہوں نے وزارت تعلیم کو اپنے لئے منتخب کیا۔ اور اپنی دور اندیشی سے ایسی تعلیمی اصلاحات لائیں کہ آج ہندوستان کا سارا تعلیمی ڈھانچہ ان کی فکر سے ترقی کر رہا ہے۔

Youme Taleem Taqreeb

Youme Taleem Taqreeb

ہندوستان کی تعلیمی پالیسی میں مولانا آزاد کے افکار کوشامل رکھنا لازمی ہے۔ مولانا آزاد نے اپنی شخصیت کے گوناگوں پہلوئوں سے ہندوستان کی تہذیبی ترقی میں بھی اہم کردار ادا کیا۔جناب محمد عبدالقدوس سابق پرنسپل آرمور ڈگری کالج اور جناب اعجاز صاحب نے بھی تقریب سے خطاب کیا۔ محمد عبدالبصیر نے شکریہ ادا کیا۔