بزم ارباب ادب، ویشالی کے زیر اہتمام آل بہار مشاعرہ

Vashali Mushaira

Vashali Mushaira

پاتے پور (نمائندہ خصوصی) ویشالی ضلع کے دور افتادہ گائوں چاند پور فتح میں ایک شاندار آل بہار مشاعرہ کا انعقاد کیا گیا۔ مشاعرہ کی صدارت بزرگ شاعر، ناقد اور عالم دین پروفیسر فاروق احمد صدیقی نے فرمائی جبکہ نظامت کے فرائض شکیل سہسرامی نے بحسن و خوبی انجام دئیے۔

علمی مجلس کے جنرل سکریٹری پرویز عالم مہمان اعزازی کی حیثیت سے شریک مشاعرہ تھے۔ بزم ارباب ادب کے جنرل سکریٹری بدر محمدی نے مشاعرہ سے قبل تمام شعرائے کرام اور مہمانان کا استقبال کیا اور بزم ارباب ادب کی سرگرمیوں پر روشنی ڈالی۔

مشاعرہ میں جن شعرائے کرام نے اپنے کلام پیش کیے ان کے اسمائے گرامی ہیں: پروفیسر فاروق احمد صدیقی، قیصر صدیقی، قوس صدیقی، ناشاد اورنگ آبادی، حسین منظر، ظفر صدیقی، تعظیم احمد گوہر،فردوس گیاوی،منور راہی، کامران غنی صبا، منظور عادل، شکیل سہسرامی، کہکشاں توحید، بدر محمدی، منظر ریونڈھوی، مظہر وسطوی، بشر رحیمی، عرفان احمد پیدل، حسن چاند پوری،قاسم ہدایت پوری، ناظم قادری، علی احمد منظر، منظر صدیقی، دانش القادری، اعجاز عادل۔

اس موقع پر مکھیا مصطفی حسن، ڈاکٹر نثار الحق، قمر الزماں، نسیم الحق، معین الحق، حافظ محمد شاکر، ڈاکٹر نثار الحق، احتشام فریدی، رضوان احمد ، سید اقبال سمیت کئی معزز شخصیات اور کثیر تعداد میں سامعین بھی موجود تھے۔ مشاعرہ میں پیش کیے گئے کلام کا منتخب حصہ پیش خدمت ہے:

پروفیسر فاروق احمد صدیقی
اب نئی تہذیب میں ہے بے لباسی ہی لباس
ارتقا کا یہ سفر ہے قصرِ دریا کی طرف

قیصر صدیقی
سماعت کی دعائیں لیتے رہیے
غزل کی آبرو ہو جائیے گا

قوس صدیقی
جو آبدار ہے خود راستہ بناتا ہے
یہ ‘سیل سبز’ کسی کے کہے سے گزرے کیوں

ناشاد اورنگ آبادی
وہاں برستی ہے لعنت خدا کی روز و شب
بڑے بزرگ کا جس گھر میں احترام نہ ہو

حسین منظر
وہ جو قطرہ ہے تو قطرہ ہی سمجھتا ہے مجھے
جو سمندر ہے سمجھتا ہے سمندر مجھ کو

منور راہی
سکون زیست مرا آرزو نے چھین لیا
جو اعتبار تھا وہ گفتگو نے چھین لیا

ظفر صدیقی
کیوں مجھ کو سیاست کی طرف کھینچ رہے ہو
ہم لوگ طوائف سے محبت نہیں کرتے

فردوس گیاوی
وفا، خلوص ، محبت یہ پیار خوشبو ہے
بہت سنبھال کے رکھنا ائے یار خوشبو ہے

بدر محمدی
چل رہا ہے وہ دائو پانی میں
کیا کروں میں بچائو پانی میں

کامران غنی صبا
بستی جو جلائو گے اٹھے گیا دھواں لیکن
تم پر ہے یقین سب کو تم کالی گھٹا لکھنا

شکیل سہسرامی
رہبر وہ بن گیا ہے جو قاتل تھا کل تلک
منزل ہمارے واسطے آسان اب کہاں

تعظیم احمد گوہر
جس کو سب نے کہا نہیں اچھا
ہم نے بھی کہہ دیا نہیں اچھا

منظور عادل
کیا یہ خوش فہمیوں کا اثر ہے
اپن قد سے بڑا لگ رہا ہوں

بشر رحیمی
جوان بیٹیوں کا باپ مر گیا کہہ کر
شکم کی آگ بجھاتے کہ شادیاں کرتے

مظہر وسطوی
کلام اللہ کو پڑھ کر، سمجھ کر پھونک دینے سے
اک آیت کا اثر مدت تلک پانی میں رہتا ہے