سوشلسٹ پارٹی کیطرف سے امیدوار قومی اسمبلی محمد اقبال چوہدری کی الیکشن مہم کا شاندار آغاز

Barcelona

Barcelona

بارسلونا (یوسف چوہدری) سپین کی سابق حکمران جماعت اور پارلیمنٹ میں موجودہ اپوزیشن جماعت سوشلسٹ پارٹی کی جانب سے سپین کی تاریخ میں پہلی بار ایک پاکستانی محمد اقبال چوہدری کو امیدوار قومی اسمبلی کیلئے ٹکٹ جاری کیا گیا جن کی انتخابی مہم کا آغاز قرطبہ ریسٹورنٹ بادالونا پر ایک شاندار جلسہ کے ذریعے کیا گیا جس میںسوشلسٹ راہنمائوں کے ساتھ ساتھ منہاج القرآن انٹرنیشنل، پاکستان عوامی تحریک، پاکستان پیپلز پارٹی، پاکستان مسلم لیگ ن ، پاکستان مسلم لیگ ق اور پاکستان تحریک انساف سمیت صحافتی،سماجی تنظیموں کے سرکردہ افراد کے علاوہ پاکستان نژاد نیشنلٹی ہولڈر زکی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی ۔

پاکستانی کمیونٹی کی تقریبات کے پروٹوکول کو مد نظررکھتے ہوئے جلسہ کا باقاعدہ آغاز تلاوت قرآن پاک اور نعت رسول مقبول ۖ سے کیا گیا جس کی سعادت بالترتیب علامہ عبدالرشید شریفی اور قدیر احمد خان نے حاصل کی ۔اسٹیج سیکریٹری کے فرائض نوید احمد اندلسی نے سر انجام دئیے ۔امیدوار قومی اسمبلی محمد اقبال چوہدری نے جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ان کی نامزدگی پاکستانی بھائیوں کیلئے اعزاز ہے ،آج اگر میں اس مقام پر ہوں تو یہ آپ سب بھائیوں کی محبتوں کا نتیجہ ہے اگر میں نے کسی کی طرف ایک قدم بڑھایا ہے تو مجھے دوسری طرف سے توقع سے زیادہ پیار ملا ہے جس کی مثال آج یہاں پر کمیونٹی کی بھرپور شرکت کی صورت میں میرے سامنے ہے

،انہوں نے کہا کہ سیاسی مخالفتیں اپنی جگہ لیکن مجھے آج انتہائی خوشی محسوس ہو رہی ہے کہ پاکستان کیلئے ہم سب ایک ہیں ،مجھے اس بات سے کوئی غرض نہیں کہ انتخابات میں ہماری جیت ہوتی ہے یا ہار لیکن یہ پاکستانی برادری کیلئے فخر کی بات ہے کہ سپین کی تاریخ میں قومی اسمبلی کیلئے ایک پاکستانی کو نامزد کیا گیا ہے ،محمد اقبال چوہدری نے کہا کہ قومی اسمبلی کیلئے امیدوار نامزد ہونے سے قبل بھی میری خدمات پاکستانی بھائیوں کیلئے وقف تھیں اور آئندہ بھی پاکستانی بھائیوں کی خدمت کیلئے پیش پیش رہوں گا ۔

انہوں نے کہا کہ تمام پاکستانی بھائیوں کو چاہیے کہ اپنی نسلوں کے بہتر مستقبل کیلئے پاکستان میں بلند و بالا عمارتیں تعمیر کرنے کی بجائے اپنے بچوں کی تعلیم پر زور دیں اور مقامی سیاست اور سماجی حلقوں کا حصہ بنیں۔ جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے سوشلسٹ پارٹی کے راہنمائوں کارلس پری ایتو،ایریکاتورے گروسا،خوسے ماریہ سالا،ازابیل لوپث اور کارلس مارتی نے محمد اقبال چوہدری کی پاکستانی کمیونٹی میں گرانقدر خدمات پر ان کو خراج تحسین پیش کیا اور اپنی پارٹی کی انتخابی فہرستوں میں اُن کے نام کی موجودگی کو اپنی پارٹی کے لیے باعث فخر قرار دیا۔

انہوں نے کہا کہ سوشلسٹ پارٹی مزدور طبقات اور اعتدال پسند طبقات کی نمائندہ جماعت ہے جس نے پہلے بھی تارکین وطن کے حقوق کیلئے نمایاں کارنامے سرانجام دیے تھے اور آئندہ بھی اقتدار میںآکر تارکین وطن سے متعلقہ قوانین میں آسانیاں پیدا کرنا ان کی ترجیحات میں شامل ہو گا ،مقررین نے کہا کہ موجودہ حکومت نے عرصہ دراز سے مقیم تارکین وطن کے لیے نیشنیلٹی کا حصول مشکل بنا گیا ہے جو طریقہ کار وضع کیاہے وہ انتہائی دشوار ہے جس پر سوشلسٹ پارٹی برسر اقتدار میں آکر واضح تبدیلی لائے گی ۔

پارٹی قائدین کا یہ بھی کہنا تھا کہ صرف سوشلسٹ پارٹی ہی وہ جماعت ہے جو موجودہ حکومت کو گھر بھیج سکتی ہے ، موجودہ حکومت نے مالی بحران کے خاتمے کے لیے جو حل وضع کیا ہے وہ بری طرح ناکام ہو چکا ہے، جلسہ سے سوشلسٹ پارٹی کے پاکستانی نژاد رہنماؤں افضال بیدار اور حافظ عبدالرزاق صادق نے خطاب کرتے ہوئے محمد اقبال چوہدری کی قومی اسمبلی کیلئے نامزدگی کو پاکستانی برادری کیلئے اعزازقرار دیا ۔

جلسہ کے باقاعدہ آغاز سے پہلے ، دوران اور بعد میں پاکستانی کمیونٹی کے رہنماء محمد اقبال چوہدری سے فرداً فرداً ملاقات کرتے ہوئے ان کی نامزدگی کو پوری کمیونٹی کے لیے باعث فخر قرار دیے ہوئے اُنہیں مبارک باد یں پیش کرتے رہے۔ سوشلسٹ پارٹی کے سپینش رہنماؤں نے جلسہ میں شریک پاکستانی کمیونٹی کی بڑی تعداد کو انٹیگریشن کا کامیاب ماڈل قرار دیا۔

جلسہ کی سٹیج پر سوشلسٹ رہنماء ایسا بیل لوپث بھی موجود تھیں جو 12سال سے مسلسل ممبر پارلیمنٹ ہیں۔ سٹیج سیکریٹری نوید احمد اندلسی شرکاء کو سپین کے نظام انتخاب کے متعلق معلومات بھی فراہم کرتے رہے ۔جلسہ میں شریک اردو میڈیا سے وابستہ صحافیوں کی بڑی تعداد کا فرداً فرداً شکریہ اداء کیا گیا۔ جلسہ کے اختتام پر تمام شرکاء کے لیے کھانے کا انتظام بھی کیا گیا تھا۔