پاکستان پیپلز پارٹی فرانس اور مینارٹی ونگ یورپ کے زیراہتمام یورپین پارلیمنٹ کے سامنے احتجاجی مظاہرہ

Europe Protest

Europe Protest

پیرس (نمائندہ خصوصی) پاکستان پیپلز پارٹی فرانس اور مینارٹی ونگ یورپ کے زیر اہتمام یورپین پارلیمنٹ کے سامنے ایک احتجاجی مظاہرہ کیا گیا اس احتجاجی کا مقصد بتاتے ہوئے پاکستان پیپلز پارٹی یورپ کے کو آرڈینیٹر کامران یوسف گھمن نے کہا کہ فرانس بلجیم اور پاکستان میں دہشتگردی کرنے والے لوگ ایک ہی نظیریہ اور سوچ رکھتے ہیں یہ وہ لوگ ہیں جو اپنی سوچ کو لوگوں پر دہشتگردی سے مسلط کرنا چاہتے ہیں۔

دہشتگردی کا واقعہ کسی ملک میں ہو ہم اس کی مذمت کرتے ہیں اور اس کو روکنے کیلئے پوری دنیا کے جمہوریت پسند لوگوں کو ایک بات پر اکٹھا ہونا ہے اور ان تمام لوگوں کا خاتمہ ممکن بنانا ہے پاکستان اس دہشتگردی کا سب سے زیادہ نشانہ بنا ہے پاکستان کے عوام نے سب سے زیادہ نقصانات اٹھائے ہیں۔

پاکستان پیپلز پارٹی وہ واحد جماعت ہے جن کی سربراہ محترمہ بینظیربھٹو اسی سوچ کے لوگوں کے ہاتھوں شہید ہوئی ہیں اس لئے پیپلز پارٹی کے ورکرز اور جیالوں نے ہمیشہ دہشتگردی کے خلاف ہروال دستے کا کام کیا ہے اور ہم اس کیلئے ہر محاز پر جہاد جاری رکھیں گے انھوں نے یورپین پارلیمنٹ سٹراس برگ کے سیکرٹری کو یادواشت بھی پیش بھی کی۔

پاکستان پیپلز پارٹی مینارٹی ونگ یورپ کے کنوئنر شاہ زیب بھٹی نے اس موقع پر تمام لوگوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں مینارٹی کے حقوق کا پاکستان پیپلز پارٹی نے ہمیشہ دفاع کیا ہے اور ان کے حقوق کی جنگ لڑی ہے ہم پاکستان پیپلز پارٹی کے پلیٹ فارم سے مینارٹی پاکستان سے تعلق رکھنے والے لوگ ان کے شانہ بشانہ دہشتگردی کی اس لعنت کے خلاف متحد ہیں اور ہم اپنی جنگ جاری رکھیں گے۔

پاکستان پیپلز پارٹی یوتھ ونگ فرانس کے صدر ملک رضا نے اس موقع پر کہا کہ پاکستان جس دہشتگردی کا نشانہ بنا ہوا ہے اسی طرح فرانس اور بلجیم بھی وقعات ہوئے ہم ان کی پرزور مژمت کرت ہیں ہمیں جس طرح پاکستان کییء دہشتگردی کیخلاف لذنا ہے اسی طرح فران سمیں بی ان لوگوں کیکلاف اپنی جنگ جاری رکھنی ہے جو اس پرامن ملک کے ماحول کو خراب کرنا چاہتے ہیں کیونیکہ فران ساور یورپ ہمارا دوسرا ملک ہے یہاں پر دہشتگردوں کی مخالفت پاکستان کے دہشتگردوں کی مخالفت ہے۔

پاکستان پیپلزپارٹی فرانس کے میڈیا ایڈوائزر ایم اے صغیر نے کہا کہ دہشتگردی ایک عالمی مسئلہ ہے اور اس کیلئے پوری دنیا کے تمام ممالک کو ہر قسم کی دہشتگردی کے خلاف ملک کر لڑنا ہو گا اور دہشتگردی کو کسی مذہب کے ساتھ نہیں جوڑنا چاہے کیونکہ دہشتگرد کا کوئی مذہب نہیں ہوتا ہمیں ان تما م باتوں سے بالا تر ہو کر دہشتگردی کے خاتمے کے لئے مل کر کام کرنا ہوگا اور اس کے لئے یورپ کو پاکستان کے ساتھ تعاون کرنا چاہئے۔