پٹنہ: بہار اردو اکادمی نے خبرنامہ کی اشاعت دوبارہ شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے

Rehan Ghani

Rehan Ghani

پٹنہ: ٦ اکتوبر بہار اردو اکادمی نے ”خبرنامہ” کی اشاعت دوبارہ شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس کے لئے تیاریاں شروع کردی گئی ہیں۔ اکادمی کا ”خبرنامہ” کافی عرصہ سے بند تھا۔ اس کی بنیادی وجہ اکادمی میں اسٹاف کی کمی تھی، لیکن جب پروفیسر عبدالغفور اقلیتی فلاح کے وزیر بنائے گئے تو انہوںنے اکادمی کے کام کاج کا جائزہ لیتے ہوئے اسے مزید سرگرم بنانے کے عزم کا اظہار کیا تاکہ اردو اکادمی زیادہ سے زیادہ اردو عوام اور اردو حلقے تک پہنچ سکے۔

اس کے لئے وزیر موصوف نے نہ صرف کئی مفید مشورے دئے بلکہ کچھ عملی اقدامات بھی کئے۔ اکادمی کے ”خبرنامہ” کی تجدید بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے۔ گزشتہ ٢٠ستمبر ٢٠١٦ء کو اکادمی کی مجلس عاملہ کی نشست میں ”خبرنامہ” دوبارہ جاری کرنے کا فیصلہ کیاگیا اور اس پر ہونے والے اخراجات کو بھی منظوری دی گئی۔ مجلس عاملہ کی میٹنگ میں ہی اتفاق رائے سے سینئر صحافی ڈاکٹر ریحان غنی کو ”خبرنامہ” کا ایڈیٹر بنانے کا بھی فیصلہ کیاگیا۔

اس فیصلے کی روشنی میں ٥اکتوبر ٢٠١٦ء کو انہیں اردو اکادمی کے سکریٹری جناب مشتاق احمد نوری نے تقررنامہ دیا اور ٦اکتوبر کو ڈاکٹر ریحان غنی نے ایڈیٹر کی ذمہ داریاں بھی سنبھال لیں۔ انشاء اﷲ ”خبرنامہ” کا افتتاحی شمارہ اکتوبر کے اواخر میں منظر عام پر آجائے گا۔ یہ خبرنامہ نئی نسل کے لئے بھی زیادہ سے زیادہ مفید ہواس کے لئے اس میں روزگار سے متعلق ضروری معلومات بھی فراہم کی جائیں گی۔ساتھ ہی اقلیتی فلاح کے محکمہ کے ذریعہ جو ترقیاتی کام ہورہے ہوںگے اس کی خبر بھی شائع کی جائے گی۔ سکریٹری جناب مشتاق احمد نوری نے بتایا کہ انہوںنے ڈائرکٹر اقلیتی فلاح کو خط لکھ کر ان سے گزارش کی ہے کہ محکمہ کے ترقیاتی کاموں کی رپورٹ اکادمی کو بھیجی جائے تاکہ اس کی جانکاری عوام کو ہوسکے۔ خبرنامہ فی الحال آٹھ صفحے کا ہوگا اور اس کی اشاعت ماہانہ ہوگی۔ بعد میں اس کی مدت اشاعت پر غور کیاجاسکتا ہے۔