نواسہ رسول نے اپنی اور اپنے کنبے کی جانوں کی قربانی دیکر اسلام کو حفاظت بخشی، پیر طیب الرحمن

 Muharram Qadria Trust Birmingham

Muharram Qadria Trust Birmingham

برمنگھم (ایس ایم عرفان طاہر سے) نواسہ رسول نے اپنی اور اپنے کنبے کی جا نو ں کی قربانی دیکر اسلام کو حفاظت بخشی ، شہداء کربلا کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی بلکہ تا قیامت انکا نام زندہ و جا وید رہے گا، اہلبیت اور صحابہ کرام سے محبت ایمان کا تقاضا ہے کیونکہ ایک رسول اللہ ۖ کے گھر والے ہیں اور دوسرے در والے ہیں ، ان خیالا ت کا ممتاز روحانی شخصیت و چیئرمین قادریہ ٹرسٹ برطانیہ صاحبزادہ پیر محمد طیب الرحمن قادری نے قادریہ ٹرسٹ و کمیونٹی ایجوکیشن سنٹر میں مفتی اعظم و سرپر ست اعلیٰ جما عت اہل سنت برطانیہ مفتی محمد گل رحمن قادری کی زیر سرپرستی شہداء کربلا کی یا د میں منعقدہ ایک عظیم الشان محفل پاک کے شرکاء سے خطاب کرتے ہو ئے کیا۔

اس موقع پر علامہ پیر محمد احمد نواز جما عتی نقشبندی ، صاحبزادہ محمد حسیب الرحمن قادری ، مولانا محمد اکرام قادری ، مولانا محمد الطاف حسین ، حافظ محمد نا صر صدیقی ، حاجی بوستان نقشبندی ، محمد عمر رانا ،حاجی محمد علی قادری ، علامہ عبد المجید قادری ، حاجی منیر حسین قادری ، صوفی مبشر ، خلیفہ حاجی محمد شبیر ، قاری محمود الحسن بخاری ، حاجی حسن حیدر ، محمد شفیق اور دیگر نے خصوصی شرکت کی ۔ صاحبزادہ پیر محمد طیب الرحمن قادری نے کہاکہ حضرت امام حسین نے ایک فا سق و فاجر اور شرابی حکمران یزید کے خلا ف کلمہ حق بلند کر کے اسلام کی لا ج رکھی اور پو ری دنیا کوحق و باطل کے درمیان تفریق کرنے کا موقع فراہم کیا ۔ انہو ں نے کہاکہ نواسہ رسول نے صبر و استقلال کی وہ اعلیٰ تاریخ رقم کی جس کی مثال دنیا کے کسی مذہب اور ملک میں نہیں ملتی آپ ۖ نے فرمایا جو حسین کو تڑپا ئے گا اسکو قیامت کے روز میری شفاعت نصیب نہیں ہو گی۔

انہو ں نے کہاکہ محرم الحرام کا یہی پیغام ہے کہ شہدا کربلا کی زندگیوں سے سبق سیکھتے ہو ئے ان جیسے کردار فکر اور عمل کو زندگیوں میں اپنا نے کی سعی کی جا ئے ۔ علامہ پیر احمد زمان جما عتی نے کاکہاکہ آج مسلمانوں کو کلمہ توحید ملا تو شہید کربلا کے صدقے ۔ انہو ں نے کہاکہ حضرت امام حسین کی قربانی اور حضرت زینب کے صبر کی مثال نہیں ملتی ۔ انہو ں نے کہاکہ اہلبیت اطہا ر اور صحابہ کرام میں سے کسی ایک سے بغض رکھنے والا بھی گمراہی اور بے راہ روی کا شکا ر ہے ۔ انہو ں نے کہاکہ ایک مومن کے سینے میں دونوں کی مشترکہ محبت و الفت موجود ہونا لازم ہے ۔ مولانا محمد اکرام قادری نے کہاکہ محرم الحرام کا مہینہ تاریخ اسلام کا سنہری باب ہے جو بے مثال واقعات اور عظیم قربانیوں سے بھرا پڑا ہے ۔ انہو ں نے کہاکہ رسول اللہ ۖ کی آل سے محبت اور اصحاب سے بغض رکھنے والے ایمان سے محروم ہیں ۔ انہو ں نے کہا کہ کربلا معلی میں چشم فلک نے وہ ظلم عظیم ہو تا ہو ا دیکھا جس کو الفاظ میں بیان کرنا ممکن نہیں ہے۔

انہو ں نے کہاکہ شمر وہ ظالم تھا جو نواسہ رسول ۖ کو شہید کرکے جہنم کا ایندھن بنا ۔ انہو ں نے کہاکہ امام حسین اگر یزید کی بیعت کر لیتے تو آج اسلام کا نام و نشان بھی باقی نہ رہتا ۔ انہو ں نے کہاکہ امام حسین کی قربانی اور استقامت نے شہادت کے بعد بھی انہیں حیات جا وداں عطا فرما دی حسین کا نام آج بھی زندہ ہے جبکہ کوئی بھی مسلمان مومن یزید کا نام لینا یا اسکے نام سے اپنے بچے کا نام رکھنا بھی گوارا نہیں کرتا ۔ محفل پاک سے علامہ مولانا عبد المجید قادری ، حافظ محمد ناصر صدیقی نے بھی خطاب کیا اور محفل پاک کے اختتام پر شرکاء میں حسینی لنگر بھی تقسیم کیا گیا۔