لگرونیا۔ سپین پاکستانی گروہ، انسانی اسمگلنگ کے جرم میں گرفتار

Spain

Spain

پیرس (زاہد مصطفی اعوان سے)
سپین کے لاریوخا ڈویژن کی پاکستانی ایسوسی ایشن میں نمبر 2 حیثیت کے حامل جاوید اے اے کو سپین رینجرز نے دیگر 4 پاکستانیوں کے ہمراہ گرفتار کر لیا ہے۔ رینجرز نے آپریشن کاآئوبا کے تحت یوروپول ایجنسی اور 150 سپاہیوں کی مدد سے گروہ کے لگرونیا، کالاہورا اور تودیلا میں 14 گھروں پر چھاپے مار کر ایک بڑی تعداد میں مختلف افراد کے پاکستانی پاسپورٹ، ویزا اسٹکر، ڈومیسائل سرٹیفیکیٹ، پاکستانی شناختی کارڈ، 22 ہزار یورو نقد، 55 موبائل فون اور حسابی کھاتے اپنی تحویل میں لے لیے۔ جاوید اور دیگر 4 افراد پاکستانیوں کو براستہ اٹلی اور براہ راست پاکستانیوں کو سپین لائے جانے کے بعد ان سے ڈونر کباب کی دکانوں اور پی سی او، پر جبری مشقت کرواتے تھے۔

پولیس حکام کے مطابق، ٹیلیفون پر تمام گروہ کی بات چیت سننے کےبعد فوری طور پر چھاپے مارنے پڑے، کیونکہ گروہ کے تمام ارکان برطانیہ، جرمنی، کینیڈا اور پاکستان منتقل ہونے کی تیاریاں کر رہا تھا۔ جبکہ گرفتارشدہ جاوید بھی 11 مارچ کو اپنے خاندان کے ہمراہ مانچسٹر کیلئے جہاز میں اپنی نشستیں بک کروا چکا تھا۔ جہاں اس نے خاندان کی مستقل رہائش کا منصوبہ بنا رکھا تھا۔ لاریوخا ایسوسی ایشن کے صدر فدا حسین نے میڈیا کے ساتھ انٹرویو میں اپنے نمبر 2 جاوید کی حمایت کی ہے۔