عالمی ماحولیاتی تبدیلی کانفرنس اور دہشت گردوں کے خلاف فرانس حکومت کی کوششیں جاری

World Climate Change Conference

World Climate Change Conference

پیرس (زاہدمصطفی اعوان) عالمی ماحولیاتی تبدیلی کانفرنس اور فرانس میں دہشت گردوں کے خلاف فرانس حکومت کی کو ششیںجاری۔ 4 مساجد سیلتفصیل کے مطابق فرانسیسی دارالحکومت پیرس میں 13 نومبر کو ہونے والی دہشت گردی میں ملوث ملزمان کی گرفتاری کے لئے کوششیں جاری ہیں۔

اس دوران چار مساجدبھی سیل کردی گئیں جبکہ 2 درجن سے زائد افراد کو ملک بدری کے احکامات جاری کردیئے گئے ہیں۔فرانس کے وزیرداخلہ برناکینور کے مطابق ملزمان کے خلاف کارروائیوں کے دوران 18 افراد کو گھروں میں نظربند کردیا گیا۔ تین سو مقامات پر چھاپے مارے گئے جن کے دوران مختلف قسم کا اسلحہ برآمد کیا گیا اور 278 افراد کو پوچھ کچھ کیلئے حراست میں لیا گیا تاہم مطلوبہ دہشت گردوں کی تلاش جاری ہے۔حکومت فرانس نے تین ماہ کے لئے ایمرجنسی کا بھی اعلان کیا ہوا ہے۔

وزیرداخلہ نے متنبہ کیا کہ انتہا پسند تنظیم داعش میں بھرتی کے لیے فرانسیسی شہریوں کو ترغیب دینے والوں کو بھی جلدہی گرفتار کرلیا جائے گا جبکہ شام اور عراق جانے اور داعش سے روابط کے بعدواپس فرانس آنے والے ایک ہزار سات سو لوگوں کی نگرانی کی جارہی ہے۔

انہوں نے عندیہ دیا کہ جہاد کی ترغیب دینے اور جہادی لٹریچر رکھنے والے اداروں اور مساجد پرکڑی نظر ہے جو بھی اس میں ملوث پایا گیا اس کے خلاف بھی فوری کاروائی کی جائے گی۔ فرانس کے دالحکومت پیرس میں عالمی ماحولیاتی تبدیلی کانفرنس جاری ہے ۔کانفرنس میں امریکی صدر باراک اوباما ۔پاکستان کے وزیر اعظم میا ں محمد نواز شریف اور دوسرے ممالک کے سربراہان نے بھی شرکت کی ۔کانفرنس بارہ دسمبر تک جاری رہے گی۔