ضیاءالامہ سنٹر بوزلے گرین میں غوث اعظم کی نسبت سے محفل پاک گیارہویں شریف کاحج کے موضوع پر اہتمام

Imam Shahid

Imam Shahid

برمنگھم ( ایس ایم عرفان طاہر سے ) ضیاء الامہ سنٹر بزلے گرین میں غوث اعظم شاہ عبد القادر جیلانی کی نسبت سے محفل پاک گیا رہویں شریف کا حج کے موضو ع پر اہتمام کیا گیا ، جس میں مقامی علماء و مشائخ ، حفاظ ، قراء اور نعت خواں حضرات نے بھرپور شرکت کی۔

محفل پاک کی میزبانی کے فرائض معروف مذہبی سکالر و انچار ج ضیاء الامہ سنٹر بو زلے گرین امام شاہد تمیز نے سرانجا م دیے جبکہ ممتاز عالم دین الشیخ زین ہو د نے مناسک حج و عمرہ کے حوالہ سے شرکاء محفل کو تفصیلی لیکچر دیا ۔اس روحانی و مذہبی محفل پاک میں حافظ محمد غلام صدیق، محمد اشتیا ق نقشبندی ، محمد اظہر اشعری ، حافظ محمد ادریس چشتی ، قاری علی محمد قا دری ، قمر خلیل ،نا صررانا ، ثاقب میر ، محمد صدیق اور دیگر نے خصوصی شرکت کی ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہو ئے امام شاہد تمیز نے کہاکہ بندہ مومن استطا عت رکھتا ہو تو پہلی فرصت میں حج کا فریضہ ادا کرے اس قبل کے موت کا پیغام آجا ئے۔

انہوں نے کہاکہ کعبتہ اللہ تین لوگوں کی روز قیامت شفاعت کرے گا ایک وہ جو حج کرنے جا ئے گا دوسرا وہ جو حج کی نیت سے جا ئے لیکن راستے میں فوت ہو جا ئے تیسرا وہ جو حج کی خواہش رکھتا ہو لیکن اس فریضہ کو ادا کرنے کی استطاعت نہ رکھے ۔ انہوں نے کہاکہ فریضہ حج ادا کرنے کے بعد مسلمان مومن ایسے ہوجاتا ہے کہ جیسے اسکا نیا جنم ہواہو ۔ علامہ محمد رمضان رضا نے کہاکہ آخری اسلامی مہینہ ہو نے کی نسبت سے ذوالحجہ کی بڑی اہمیت ہے اس مہینہ میں اپنی روز مرہ زندگی میں اخلا ص اورنیک اعمال کی فراوانی میں اضافہ ہو نا چا ہیے۔

انہوں نے کہاکہ بندہ مومن اس بات پر سر تسلیم خم کرلے کہ میری نماز میرا روزہ میرا حج اور میری زکوٰة سب کچھ میرے رب کے لیے ہے یہا ں تک کہ اللہ رب العزت کی راہ میں دنیا کی قیمتی سے قیمتی شے بھی قربان کردے یہی پیغام ہما رے پیغمبر اسلام حضرت ابراہیم اور حضرت اسماعیل نے عملی طور پر اس مہینہ کے حوالہ سے ہمیں دیا ہے ۔ نوجوان مبلغ اسلام مولانا محمد عاصم نے کہاکہ ہما ری زندگی کے تمام معاملا ت اللہ رب العزت نے قرآن پاک میں بیان فرما دیے ہیں اب یہ ہم پر لازم ہے کہ ہم اپنی دنیا و آخرت کی کامیابی و کامرانی کے لیے قرآن کریم کے احکامات کو اپنی زندگیوں پر لا گو کریں ۔ انہو ں نے کہاکہ مسلم امہ کی موجودہ دور میں پستی و تنزلی کی بہت بڑی وجہ قرآنی تعلیمات سے دوری کا نتیجہ ہے۔

انہوں نے کہاکہ قرآن کی حقیقی تعلیمات کو چھوڑنے کی وجہ سے آج سریا شام عراق اور دیگر ممالک میں دہشتگردی ، بدامنی اور انتہا پسندی کے واقعات رونما ہو رہے ہیں ۔ انہو ں نے کہاکہ ہمیں مشکل ترین حالات سے نکا لنے کی تدابیر قرآن حکیم میں موجود ہیں لیکن اسکے لیے تحقیق و مشاہدہ کی ضرورت ہے ۔ انہو ں نے کہاکہ آج بھی اگر ہم قرآن پاک کی عزت واحترام کے ساتھ ساتھ اسکے احکامات پر پورا اتریں تو ہر مشکل اور مصیبت با آسانی دور ہوسکتی ہے۔