ضیاءالامہ سنٹر بوزلے گرین میں بچوں میں مثبت سرگرمیوں کو فروغ دینے کے لیے ایک روحانی نشست

Allama Tahir Mahmood kiyani

Allama Tahir Mahmood kiyani

برمنگھم (ایس ایم عرفان طاہر سے) ضیاء الامہ سنٹر بوزلے گرین میں بچوں میں مثبت سرگرمیوں کو فروغ دینے کے لیے ایک روحانی نشست کا انعقاد کیا گیا جس میں ٥ سال سے لیکر 15 سال کے بچوں نے بھرپو ر حصہ لیااس موقع پر ممتاز نعت خواں میکائیل مالا نے اپنا خوبصورت عربی کلام پیش کیا اس روحانی وجدانی و علمی نشست سے خطاب کرتے ہو ئے معروف عالم دین الشیخ محمد طاہر محمود کیانی اور امام شاھد تمیز کا کہنا تھا کہ والدین کی عزت و احترام کے حوالہ سے بچوں کی ذہن سازی کی بیرون ممالک میں زیادہ ضرورت ہے۔

انہوں نے کہاکہ برطانیہ اور یورپ بھر میں بسنے والے والدین کو اپنے بچوں کی تعلیم و تربیت اور اپنے احترام با رے زیادہ شکایات رہتی ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ والدین کی عزت و احترام کا جذبہ بچوں میں بیدار کرنے کے لیے احسن اقدامات اٹھا نے ہونگے ۔ انہوں نے کہاکہ والدین کی رضا اور خو شنودی میں خالق و مالک کی رضا اور خو شنودی مخفی ہے ۔ انہں نے کہاکہ قرآن و سنت میں بڑوں سے احترام اور چھوٹوں سے شفقت کا وسیع و بلیغ درس ملتا ہے۔

انہوں نے کہاکہ جہا ں مسلمان کے لیے دین کا پہلا جز توحید کا پرچار بغیر کسی شرک کے ہے اس کے ساتھ دوسری جانب والدین کے ساتھ اچھا سلوک کرنا بھی عبادت ہے۔ انہوں نے کہاکہ اپنے والدین کے ساتھ ناروا اور برا سلوک کرنا بھی گناہ ہے۔ انہو ں نے کہاکہ اللہ رب العزت نے جنت کو تمہا ری مائوں کے قدمو ں تلے اسی لیے رکھا ہے کہ اس کے حصول کے لیے انکی عزت اور احترام کو ملحوظ رکھا جائے ۔ انہوں نے کہاکہ والد کی رضا مندی خالق و مالک کی رضا مندی کی نشانی ہے اور اگر تمہا ر ا والد تم سے ناراض ہو جا ئے تو اللہ نا راض ہوجا تا ہے۔

انہوں نے کہاکہ والدین کے سامنے اونچی آواز میں بات کرنا اور انکے آگے چلنا بھی انکی توہین و تضحیک تصور کیا جا تا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اگر والدین جو کام کہیں تو انکی مدد کرنی بھی باعث ثوا ب ہے۔ انہوں نے کہاکہ جب والدین دنیا سے چلے جائیں تو انکے پیچھے دعائے مغفرت مانگنا انکے نام پر صدقہ خیرات کرنا اور انکے لیے ایصال ثواب کا اہتمام کرنا بھی انکا اولاد پر حق ہے۔

انہوں نے کہاکہ جس انسان سے اس کے والدین راضی ہوجائیں تو اللہ رب العزت اسے دنیا و آخرت میں قدر و منزلت سے نوازتا ہے ۔اس روحانی محفل پاک کے اختتام پر بچوں کی تفریح کے لیے انہیں اسلامک سنٹر کے اندر فٹ بال اور ڈاج بال کھیلنے کا موقع بھی فراہم کیا گیا اور بچوں میں پیزا چپس اور کولڈ ڈرنکس بھی تقسیم کی گئیں جس سے وہ بھرپور لطف اندوز ہوئے۔